241

سول جج کی تشدد سے متاثرہ بچی کے والد کو صلح کرنے کی پیشکش

اسلام آباد کے سول جج عاصم حفیظ نے اپنے گھر میں تشدد کا شکار ہونے والی بچی رضوانہ کے والد کو صلح کرنے کی پیشکش کردی ہے۔
رضوانہ کی والدہ کے مطابق جج صاحب نے کہا ہے کہ وہ علاج کا سارا خرچہ اور الگ سے بھی رقم دینے کو تیار ہیں۔بچی کی والدہ نے مزید کہا کہ جج صاحب کی پیشکش کے بعد میں نے اُن پر واضح کردیا ہے کہ مجھے اپنی بیٹی پر تشدد کا انصاف چاہیے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہماری بچی کی صورتحال بہت نازک ہے، ہم کسی صورت صلح نہیں چاہتے، جج صاحب کو کہا کہ آپ عدالتوں میں انصاف کرتے ہیں آج اپنے کیس میں بھی انصاف کریں

کیٹاگری میں : News

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں