178

ملازمہ تشدد کیس میں سول جج کی اہلیہ کی جانب سے پولیس کو بڑی یقین دہانی کروادی گئی

بچی پر تشدد کے معاملے پر پولیس نے سول جج کی اہلیہ سے رابطہ کیا۔ جس پر سول جج کی اہلیہ نے اسلام آباد پولیس کو شامل تفتیش ہونےکی یقین دہانی کرادی۔
ذرائع کے مطابق   آئندہ 2 روز میں سول جج کی اہلیہ اسلام آباد پولیس کو اپنا بیان ریکارڈ کرائیں گی جبکہ سول جج کی اہلیہ نے لاہور ہائیکورٹ سے ضمانت لے رکھی ہے۔واضح رہے تشدد کی شکار بچی کا معاملہ 24 جولائی کو سامنے آيا تھا، بچی کی ماں نے جج کی اہلیہ پر تشدد کا الزام لگایا تھا، جب بچی کو ہسپتال پہنچایا گیا تو اس کے سر کے زخم میں کیڑے پڑ چکے تھے اور دونوں بازو ٹوٹے ہوئے تھے اور وہ خوف زدہ تھی۔دوسری جانب گھریلوملازمہ رضوانہ کا علاج کرنے والے ڈاکٹر پروفیسر فریدالظفر نے کہا ہے کہ بچی کا جگر اور گردے کا انفیکشن بھی ساتھ ساتھ چل رہا ہے، رضوانہ کی طبیعت دیکھنے کے بعد آکسیجن اتارنے کا فیصلہ کیا جائے گا اور ممکن ہے انفیکشن کی وجہ سے جسم میں آکسیجن لیول کم ہوا ہو۔

کیٹاگری میں : Social

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں